Khuftagan-e-Khak Se Istafsar- Bang-e-Dara | Allama Iqbal Poetry | خفتگان خاک سے استفسار

Khuftagan-e-Khak Se Istafsar- Bang-e-Dara | Allama Iqbal Poetry | خفتگان خاک سے استفسار

خفتگان خاک سے استفسار

Khuftagan-e-Khak Se Istafsar

 

مہر روشن چھپ گيا ، اٹھی نقاب روئے شام
شانہ ہستی پہ ہے بکھرا ہوا گيسوئے شام

Mehr-e-Roshan Chup Gya, Uthi Niqab-e-Ruye Sham
Shan-e-Hasti Pe Hai Bikhra Huwa Gaisuay Sham

 

يہ سيہ پوشی کي تياری کس کے غم ميں ہے
محفل قدرت مگر خورشيد کے ماتم ميں ہے

Ye Seyh Poshi Ki Tayari Kisi Ke Gham Mein Hai
Mehfil-e-Qudrat Magar Khurshid Ke Matam Mein Hai

 

کر رہا ہے آسماں جادو لب گفتار پر
ساحر شب کی نظر ہے ديدہ بيدار پر

Ker Raha Hai Aasman Jadoo Lab-e-Guftar Per
Sahar-e-Shab Ki Nazar Hai Didah-e-Beedar Per

 

غوطہ زن درياے خاموشی ميں ہے موج ہوا
ہاں ، مگر اک دور سے آتی ہے آواز درا

Ghota Zan Daryae Khamoshi Mein Hai Mouj-e-Hawa
Haan, Magar Ek Door Se Ati Hai Awaz E Dra

 

دل کہ ہے بے تابی الفت ميں دنيا سے نفور
کھنچ لايا ہے مجھے ہنگامہ عالم سے دور

Dil Ke Hai Betabi-e-Ulfat Mein Duniya Se Nafoor
Khanch Laya Hai Mujhe Hangama E Aalam Se Door

 

منظر حرماں نصيبی کا تماشائی ہوں ميں
ہم نشين خفتگان کنج تنہائی ہوں ميں

Manzar-e-Herman Naseebi Ka Tamashayi Hun Main
Hum Nasheen-e-Khuftagan-e-Kunj Tanhai Hun Main

 

تھم ذرا بے تابی دل! بيٹھ جانے دے مجھے
اور اس بستی پہ چار آ نسو گرانے دے مجھے

Tham Zara Betabi-e-Dil! Baith Jane De Mujhe
Aur Iss Basti Pe Char Aansu Girane De Mujhe

 

اے مے غفلت کے سر مستو ، کہاں رہتے ہو تم
کچھ کہو اس ديس کی آ خر ، جہاں رہتے ہو تم

Ae Mye Ghaflat Ke Sermasto! Kahan Rehte Ho Tum
Kuch Kaho Uss Dais Ki Aakhir, Jahan Rehte Ho Tum

 

وہ بھی حيرت خانہ امروز و فردا ہے کوئی؟
اور پيکار عناصر کا تماشا ہے کوئی؟

Woh Bhi Hairat Khana-e-Amroz O Farda Hai Koi?
Aur Pikar-e-Anasir Ka Tamasha Hai Koi

 

آدمی واں بھی حصار غم ميں ہے محصور کيا؟
اس ولا يت ميں بھی ہے انساں کا دل مجبور کيا؟

Admi Wan Bhi Hisar-e-Gham Mein Hai Mehsoor Kya?
Uss Walayat Mein Bhi Hai Insan Ka Dil Majboor Kya?

 

واں بھی جل مرتا ہے سوز شمع پر پروانہ کيا؟
اس چمن ميں بھی گل و بلبل کا ہے افسانہ کيا؟

Wan Bhi Jal Merta Hai Soz-e-Shama Per Parwana Kya?
Uss Chaman Mein Bhi Gull-o-Bulbul Ka Hai Afsana Kya?

 

ياں تو اک مصرع ميں پہلو سے نکل جاتا ہے دل
شعر کی گرمی سے کيا واں بھی پگل جاتا ہے دل؟

Yan To Ek Misre Mein Pehlu Se Nikal Jata Hai Dil
Shair Ki Germi Se Kya Wan Bi Phigalta Jata Hai Dil?

 

رشتہ و پيوندياں کے جان کا آزار ہيں
اس گلستاں ميں بھی کيا ايسے نکيلے خار ہيں؟

Rishta-o-Pewandiyan Ke Jaan Ka Azaar Hain
Uss Gulistan Mein Bhi Kya Aese Nukile Khar Hain?

 

اس جہاں ميں اک معيشت اور سو افتاد ہے
روح کيا اس ديس ميں اس فکر سے آزاد ہے؟

Iss Jahan Mein Ek Maeeshat Aur So Uftad Hai
Rooh Kya Uss Daes Mein Iss Fikar Se Azad Hai?

 

کيا وہاں بجلی بھی ہے ، دہقاں بھی ہے ، خرمن بھی ہے؟
قافلے والے بھی ہيں ، انديشہ رہزن بھی ہے؟

Kya Wahan Bijli Bhi Hai, Dehqan Bhi Hai, Kherman Bhi Hai?
Kafle Wale Bhi Hain, Andaisha Rehzan Bhi Hai?

 

تنکے چنتے ہيں و ہاں بھی آ شياں کے واسطے؟
خشت و گل کی فکر ہوتی ہے مکاں کے واسطے؟

Tinke Chunte Hain Wahan Bhi Aashiyan Ke Wastay?
Khishat-e-Gill Ki Fikar Hoti Hai Makan Ke Wastay?

 

واں بھی انساں اپنی اصليت سے بيگانے ہيں کيا؟
امتياز ملت و آئيں کے ديوانے ہيں کيا؟
Wan Bhi Insan Apni Asliyat Se Begane Hain Kya ?
Imtiaz-e-Millat-o-Aaeen Ke Diwane Hain Kya?

 

واں بھی کيا فرياد بلبل پر چمن روتا نہيں؟
اس جہاں کی طرح واں بھی درد دل ہوتا نہيں؟

Wan Bhi Kya Faryad-e-Bulbul Per Chaman Rota Nahin?
Iss Jahan Ki Tarah Wan Bhi Dard-e-Dil Hota Nahin?

 

باغ ہے فردوس يا اک منزل آرام ہے؟
يا رخ بے پردہ حسن ازل کا نام ہے؟

Bagh Hai Fardous Ya Ek Manzal-e-Aramhai?
Ya Rukh E Be Perwa Husn-e-Azal Ka Naam Hai?

 

کيا جہنم معصيت سوزی کی اک ترکيب ہے؟
آگ کے شعلوں ميں پنہاں مقصد تاويب ہے؟

Kya Jahanum Maseeyat Sozi Ki Ek Tarkeeb Hai?
Aag Ke Sholon Mein Pinhan Maqsad-e-Tadeeb Hai?

 

کيا عوض رفتار کے اس ديس ميں پرواز ہے؟
موت کہتے ہيں جسے اہل زميں ، کيا راز ہے ؟

Kya Ewz Raftar Ke Uss Dais Mein Parwaz Hai?
Mout Kehte Hain Jise Ahle Zameen, Kya Raaz Hai?

 

اضطراب دل کا ساماں ياں کی ہست و بود ہے
علم انساں اس ولايت ميں بھی کيا محدود ہے؟

Iztarab-e-Dil Ka Saman Yan Ki Hast-o-Bood Hai
Ilm E Insan Uss Walayat Mein Bhi Kya Mehdood Hai?

 

ديد سے تسکين پاتا ہے دل مہجور بھی؟
‘لن ترانی’ کہہ رہے ہيں يا وہاں کے طور بھی؟

Deed Se Taskeen Pata Hai Dil-e-Mahjoor Bhi?
‘Lan Tarani’ Keh Rahe Hain Ya Wahan Ke Toor Bhi?

 

جستجو ميں ہے وہاں بھی روح کو آرام کيا؟
واں بھی انساں ہے قتيل ذوق استفہام کيا؟

Justujoo Mein Hai Wahan Bhi Rooh Ko Aaram Kya?
Wan Bhi Insan Hai Qateel-e-Zauq-e-Istafham Kya?

 

آہ! وہ کشور بھی تاريکی سے کيا معمور ہے؟
يا محبت کی تجلی سے سراپا نور ہے؟
Aah! Vo Kishwar Bhi Tareeki Se Kya Mamoor Hai?
Ya Mohabbat Ki Tajalli Se Sarapa Noor Hai?

 

تم بتا دو راز جو اس گنبد گرداں ميں ہے
موت اک چبھتا ہوا کانٹا دل انساں ميں ہے

Tum Bata Do, Raaz Jo Iss Gunbad-e-Gardan Mein Hai
Mout Ek Chubhta Huwa Kanta Dil-e-Insan Mein Hai

 

Parinde Ki Faryad- Bang-e-Dara | Allama Iqbal Poetry | پرندے کی فرياد

Maan Ka Khawab- Bang-e-Dara | Allama Iqbal Poetry | ماں کا خواب

Hamdardi- Bang-e-Dara | Allama Iqbal Poetry | ہمدردی

2 thoughts on “Khuftagan-e-Khak Se Istafsar- Bang-e-Dara | Allama Iqbal Poetry | خفتگان خاک سے استفسار

  1. Pingback: great site
  2. Pingback: rove brand

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *