Ki Gode Mein Bili Dekh Kar- Bang-e-Dara | Allama Iqbal Poetry | کی گود ميں بلی ديکھ کر

کی گود ميں بلی ديکھ کر

Ki Gode Mein Bili Dekh Kar

 

تجھ کو دزديدہ نگاہی يہ سکھا دی کس نے
رمز آغاز محبت کی بتا دی کس نے

Tujh Ko Duz Didah Nigahi Ye Sikha Di Kis Ne
Ramz Aghaz-e-Mohabbat Ki Bata Di Kis Ne

 

ہر ادا سے تيری پيدا ہے محبت کيسی
نيلی آنکھوں سے ٹپکتی ہے ذکاوت کيسی

Har Ada Se Teri Paida Hai Mohabat Kaisi
Neeli Ankhon Se Tapakti Hai Zakawat Kaisi

 

ديکھتی ہے کبھی ان کو، کبھی شرماتی ہے
کبھی اٹھتی ہے ، کبھی ليٹ کے سو جاتی ہے

Dekhti Hai Kabhi In Ko, Kabhi Sharmati Hai
Kabhi Uthti Hai, Kabhi Lait Ke So Jati Hai

 

آنکھ تيری صفت آئنہ حيران ہے کيا
نور آگاہی سے روشن تری پہچان ہے کيا

Ankh Teri Sift-e-Aaeena Heran Hai Kya
Noor-e-Agahi Se Roshan Teri Pehchan Hai Kya

 

مارتی ہے انھيں پونہچوں سے، عجب ناز ہے يہ
چھيڑ ہے ، غصہ ہے يا پيار کا انداز ہے يہ

Maarti  Hai Inhain Ponhchon Se, Ajab Naaz Hai Ye
Chair Hai, Gussa Hai Ya Pyar Ka Andaz Hai Ye

 

شوخ تو ہوگی تو گودی سے اتاريں گے تجھے
گر گيا پھول جو سينے کا تو ماريں گے تجھے

Shaukh Tu Ho Gi To Godi Se Utarain Ge Tujhe
Gir Gya Phool Jo Seene Ka To Marain Ge Tujhe

 

کيا تجسس ہے تجھے ، کس کی تمنائی ہے
آہ! کيا تو بھی اسی چيز کی سودائی ہے

Kya Tajasus Hai Tujhe, Kis Ki Tamanai Hai
Ah! Kya Tu Bhi Issi Cheez Ki Sodayi Hai

 

خاص انسان سے کچھ حسن کا احساس نہيں
صورت دل ہے يہ ہر چيز کے باطن ميں مکيں

Khas Insan Se Kuch Husn Ka Ehsas Nahin
Soorat-e-Dil Hai Ye Har Cheez Ke Batin Mein Makeen

 

شيشہ دہر ميں مانند مے ناب ہے عشق
روح خورشيد ہے، خون رگ مہتاب ہے عشق

Sheesha-e-Dehr Mein Manind-e-Mai-e-Naab Hai Ishq
Rooh-e-Khursheed Hai, Khoon-e-Rag-e-Mehtab Hai Ishq

 

دل ہر ذرہ ميں پوشيدہ کسک ہے اس کی
نور يہ وہ ہے کہ ہر شے ميں جھلک ہے اس کی

Dil-e-Har Zarra Mein Poshida Kasak Haai Iss Ki
Noor Ye Wo Hai Ke Har Shay Mein Jhalak Hai Uss Ki

 

کہيں سامان مسرت، کہيں ساز غم ہے
کہيں گوہر ہے ، کہيں اشک ، کہيں شبنم ہے

Kahin Saman-e-Musarrat, Kahin Saaz-e-Gham Hai
Kahin Gohar Hai, Kahin Ashk, Kahin Shabnam Hai

 

 

Husn-e-Ishq- Bang-e-Dara | Allama Iqbal Poetry | حسن و عشق

Akhtar-e-Subah- Bang-e-Dara | Allama Iqbal Poetry | اختر صبح

Talba-e-Ali Garh College Ke Naam- Bang-e-Dara | Allama Iqbal Poetry | طلبۂ علی گڑھ کالج کے نام

3 thoughts on “Ki Gode Mein Bili Dekh Kar- Bang-e-Dara | Allama Iqbal Poetry | کی گود ميں بلی ديکھ کر

  1. Очень актуальные новинки подиума.
    Абсолютно все новости лучших подуимов.
    Модные дома, лейблы, haute couture.
    Самое лучшее место для модных людей.
    https://malemoda.ru/

  2. Pingback: breaking bad
  3. Pingback: essentials

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *