Payam- Bang-e-Dara | Allama Iqbal Poetry | پيام

پيام

Payam

 

عشق نے کردیا تجھے ذوقِ تپش سے آشنا
بزم کو مثلِ شمعِ بزم حاصلِ سوز و ساز دے

Ishq Ne Kar Diya Tujhe Zauq-e-Tapish Se Ashna
Bazm Ko Misl-e-Shama-e-Bazm Hasil-e-Souz-o-Saaz

 

شانِ کرم پہ ہے مدار عشقِ گرہ کشائے کا
دیر و حرم کی قید کیا ! جس کو وہ بے نیاز دے

Shan-e-Karam Pe Hai Madar Ishq-e-Girah Kushaye Ka
Dair-o-Haram Ki Qaid Kya! Jis Ko Woh Be-Niaz De

 

صورتِ شمع نور کی ملتی نہیں قبا اسے
جس کو خدا نہ دہر میں گریۂ جانگداز دے

Soorat-e-Shama Noor Ki Milti Nahin Qaba Use
Jis Ko Khuda Na Dehr Mein Girya-e-Jaan Gudaz De

 

تارے میں وہ ، قمر میں وہ ، جلوہ گہِ سحر میں وہ
چشمِ نظّارہ میں نہ تو سرمۂ امتیاز دے

Tare Mein Woh, Qamar Mein Woh, Jalwagah-e-Sehar Mein Woh
Chashm-e-Nazara Mein Na Tu Surma-e-Imtiaz De

 

عشق بلند بال ہے رسم و رہِ نیاز سے
حسن ہے مستِ ناز اگر تو بھی جوابِ ناز دے

Ishq Buland Baal Hai Rasm-o-Reh-e-Niaz Se
Husn Hai Mast-e-Naz Agar Tu Bhi Jawab-e-Naaz De

 

پیرِ مغاں فرنگ کی مے کا نشاط ہے اثر
اس میں وہ کیفِ غم نہیں، مجھ کو تو خانہ ساز دے

Peer-e-Mughan! Farang Ki Mai Ka Nishat Hai Asar
Iss Mein Woh Kaif-e-Gham Nahin, Mujh Ko To Khana Saaz De

 

تجھ کو خبر نہیں ہے کیا ! بزمِ کہن بدل گئی
اب نہ خدا کے واسطے ان کو مٔے مجاز دے

Tujh Ko Khabar Nahin Hai Kya! Bazm-e-Kuhan Badal Gyi
Ab Na Khuda Ke Waste In Ko Mai-e-Majaz De

 

Haqiqat-e-Husn- Bang-e-Dara | Allama Iqbal Poetry | حقيقتِ حسن

Muhabbat- Bang-e-Dara | Allama Iqbal Poetry | محبت

Kinar-e-Ravi- Bang-e-Dara | Allama Iqbal Poetry | کنار راوی

3 thoughts on “Payam- Bang-e-Dara | Allama Iqbal Poetry | پيام

  1. Pingback: more info here
  2. Pingback: steenslagfolie

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *