Buro Se Acha Salook | Sheikh Saadi Ki Hikayat

Buro Se Acha Salook | Sheikh Saadi Ki Hikayat | بروں سے اچھا سلوک

بروں سے اچھا سلوک

Buro Se Acha Salook

 

بیان کیا جاتا ہے کہ ایک شب ایک چور ایک نیک لیکن غریب شخص کے گھر میں داخل ہو گیا۔ اس نے ادھر ادھر بہت ہاتھ مارے لیکن وہاں کچھ ہوتا تو اسے ملتا اتفاق سے اس دوران میں نیک مرد بھی جاگ گیا اور آہٹ کی آواز سن کر سمجھ گیا کہ گھر میں چور گھسا ہوا ہے اور وہ میرے گھر سے خالی ہاتھ جائے گا۔ اس نے جلد سے وہ کمبل اتارا جو خود اوڑھے ہوئے تھا اور چور کے راستے میں پھینک دیا۔

سچ ہے اللہ والوں کے دلوں میں اپنے دشمنوں کے لیے بھی خیرخواہی کا جذبہ ہوتا ہے وہ کسی کو بھی رنجیدہ کرنا نہیں چاہتے۔

 

سنا ہے خدا کے جو بن جائیں دوست
وہ کرتے نہیں دشمنوں کو بھی تنگ
کمینے کو کیسے ملے یہ مقام
کہ وہ دوستوں سے بھی کرتا ہے جنگ

 

وضاحت

حضرت سعدیؒ نے اس حکایت میں احسان کی طرف توجہ دلائی ہے۔ احسان کا مفہوم یہ ہے کہ کسی کے ساتھ اس کے حق سے زیادہ سلوک کیا جائے۔ مثال کے طور پر یہ حسن سلوک ہے کہ اگر کوئی شخص قصور کرے تو اسے معاف کر دیا جائے۔ لیکن اگر معاف کر نے کے علاوہ اسے کچھ دے بھی دیا جائے تو یہ احسان ہو گا اور محسنین ہو گا کا بہت بڑا درجہ ہے۔

 

 

 

Burai Ka Sadebab | Sheikh Saadi Ki Hikayat | برائی کا سد باب

Baniye Ka Udhar | Sheikh Saadi Ki Hikayat | بنیے کا ادھار

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *